وزیر اعظم عمران خاں سے ملاقات، تاریخ میں پہلی بار امریکی صدر بھی دباؤ کا شکار۔۔۔ جانتے ہیں ٹرمپ کے لئے کس کا حکم آگیا

121

اسلام آباد(نیوز ڈیسک آن لائن)وزیراعظم عمران خاں امریکہ کے اپنے پہلے سرکاری دورے پر واشنگٹن پہنچ چکے ہیں اُن کا یہ سرکاری دورہ تین رو زپر محیط ہو گا اُن کے ہمراہ پاکستان کی عسکری قیادت بھی موجود ہے وزیر اعظم اپنے دورے کے دوران پاکستانی سفارت خانے میں قیام کریں گے۔

وزیر اعظم پاکستان عمران خاں کے اس دورے کو امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے ساتھ ہونے والی ملاقات کی وجہ سے کافی زیادہ اہمیت کا حامل قرار دیا جا رہا ہے اس حوالے سے میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ پینٹاگون کے دباؤ پر وزیر اعظم پاکستان سے ملاقات کے لئے راضی ہوئے ہیں۔ ایک موقر قومی اخبار کی رپورٹ کے مطابق پینٹاگون کی اعلی قیادت نے وائٹ ہاؤس کو پیغام بجھوایا تھا کہ پاکستانی کی نئی لیڈرشپ سے معاملات کو اعلی سطح پر حل کرنے کا طریقہ یہی ہے کہ وزیر اعظم پاکستان عمران خاں کو امریکہ کے سرکاری دورے کی دعوت دی جائے  اور ایک دوسرے کے سامنے بیٹھ کر بعض تصفیہ طلب معاملات کا حل نکالا جائے۔ آخری اطلاعات آنے تک دونوں رہنماؤں کے درمیان ہونے والی ملاقات کے ایجنڈے کو حتمی شکل دی جا چکی ہےپینٹا گون کا موقف تھا کہ وزیر اعظم عمران خاں کو وہی پروٹوکول دیا جائے جو جنوبی ایشیاء کے اہم رہنماؤں کو امریکہ کے دورے پر دیا جاتا ہے جن میں امریکی ایوان بالا سے خطاب کے علاوہ سرکاری لنچ کا بھی اہتمام کیا جاتا ہے تاہم واشنگٹن میں پاکستان کی ناقص سفارتکاری کی وجہ سے ایسا ممکن نہیں ہو سکا۔

Facebook Comments