نیوزی لینڈ کے کھلاڑی دل شکستہ ، عوام افسردہ مگر نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم نے ایسا اعلان کر دیا کہ سب حیران رہ گئے

21

اسلام آباد (نیوز ڈیسک آن لائن) نیوزی لینڈ کی قومی کرکٹ ٹیم کو مسلسل دوسری مرتبہ ورلڈ کپ کے فائنل میں شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے پچھلے ورلڈ کپ میں آسٹریلیا نے فائنل میں نیوزی لینڈ کو شکست دی تھی جبکہ اس ورلڈ کپ میں انگلینڈ نے سنسنی خیز مقابلے کے بعد نیوزی لینڈ کو ہرایا تھا۔

رواں ورلڈ کپ میں ہونے والی شکست کو زیادہ تکلیف دہ قرار دیا جا رہا ہے اس کی بنیادی وجہ یہ ہے کہ پہلے پچاس اوورز میں مقابلہ برابر رہا پھر سُپر اوور میں بھی مقابلہ برابر رہا تاہم زیادہ باؤنڈری کی بنیاد پر انگلش ٹیم کو فاتح قرار دیا گیا تھا اس موقع ہر یہاں نیوزی لینڈ کے تمام مداح تکلیف میں ہیں وہیں نیوزی لینڈ کی وزیراعظم جیسینڈرا آرڈن بھی گہرے صدمے سے دوچار ہیں جنہوں نے اپنے ایک پیغام میں کہا ہے کہ نیوزی لینڈ کی عوام اگر اتنے صدمے سے دوچار ہے تو کھلاڑیوں کا کیا حال ہو گا وہ تو اندر سے ٹوٹ چکے ہوں گے کہ وہ فتح کے اتنے قریب پہنچ کر ہار گئے لیکن اس کے ساتھ ہی نیزی لینڈ کی وزیر اعظم کا خیال ہے کہ کھلاڑیوں نے 100 فیصد کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے اور پوری قوم کے ہیرو ہیں لہذا نیوزی لینڈ کی قومی کر کٹ ٹیم کا وطن واپسی پر شاندار استقبال کیا جائے گا۔اُنہوں نے کہا کہ اُنہوں نے اس معاملے پر آکلینڈ کے میئر سے بھی بات کر لی ہے اور نیوزی لینڈ کی کر کٹ ٹیم کے مداح حوصلہ نہ ہاریں میں نے اتنا کانٹے دار مقابلہ پہلے کبھی نہیں دیکھااس میچ کو تاریخ میں صرف اور صرف ایک شاندار میچ کے طور پر یاد رکھا جائے گا۔

Facebook Comments