نیب نے ایک ہی دن میں حکومت کے دوسرے وفاقی وزیر پر ہاتھ ڈال دیا

29

اسلام آباد (نیوز ڈیسک آن لائن)جب سے پاکستان تحریک انصاف کی حکومت آئی ہے نیب کا ادارہ پوری طور پر متحرک ہو چکا ہے قومی دولت لوٹنے والوں کے خلاف گھیرا تنگ ہو چکا ہے اپوزیشن کے متعدد رہنما گرفتار ہو کر جیل میں ہیں جبکہ باقی ماندہ کے خلاف نیب کی تحقیات جاری ہیں ۔

چند یوم قبل نیب نے سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کو گرفتار کیا تھا اُن پر ایل این جی سکینڈل کا کیس ہے اس سے قبل سابق وزیر اعظم نواز شریف ، خواجہ سعد رفیق، خواجہ سلمان رفیق ، حمزہ شہباز وغیرہ نیب کے مہمان بن چکے ہیں سابق وزیر اعلی پنجاب میاں شہباز شریف ضمانت پر رہا ہو چکے ہیں حکومت کی جانب سے پنجاب کے سابق سینئر صوبائی وزیر علیم خاں کو گرفتار کیا گیا تھا تاہم اب وہ ضمانت پر رہا ہو چکے ہیں اب ایک بار پھر حکومت کے باری آگئی ہے اور نیب کراچی نے سابق سپیکر قومی اسمبلی ڈاکٹر فہمیدہ مرزا جو کہ اب حکومت کی اتحادی ہیں کے بیٹے حسنین مرزا کے خلاف ریفرنس داخل کردیا ہےنیب کراچی کی جانب سے 16 ملزمان کے خلاف یہ ریفرنس داخل کیا گیا ہےان ملزمان پر الزام ہے کہ اُنہوں نے نہر خیام کی غیرقانونی الاٹمنٹ کی تھی جس سے قومی خزانے کروڑوں روپے کا نقصان پہنچا تھا اس سے قبل نیب ملتان نے وفاقی وزیر منصوبہ بندی مخدوم خسرو بختیار کے خلاف تحقیات مکمل کر لی ہیں جن کے خلاف آمدن سے زائد اثاثوں کا کیس ہے 2002 کے بعد ان کے اثاثوں میں بے پناہ اضافہ ہوا ہے۔

Facebook Comments