جو کام امریکہ 18 سالوں میں نہ کرسکا وہ عمران خاں نے 11 ماہ میں کر دکھایا ، افغان طالبان کے اعلان نے ساری دنیا کو حیران کر دیا

23

اسلام آباد (نیوز ڈیسک آن لائن) وزیر اعظم عمران خاں جب امریکہ کے دورے پر گئے تو اُن کا پرتپاک استقبال کیا گیا  امریکہ میں یہاں وزیر اعظم عمران خاں نے پاکستانی کمیونٹی کی کثیر تعداد سے خطاب کیا وہاں اُن کی امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے ملاقات بھی بہت پُرا ثر رہی جس نے انڈیا  کو آگ لگا کر رکھ دی۔

وزیر اعظم عمران خاں اور امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی ملاقات میں دو موضوع خصوصی طور پر ڈسکس ہوئےامریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے مسئلہ کشمیر پر خود ثالثی کی پیش کش کی اور اپنا کردار ادا کرنے کوکہا جبکہ افغانستان سے امریکی فوج کے پُرامن انخلا میں پاکستان کوطالبان اور امریکہ کے مابین ثالثی کا کردار ادا کرنے کی درخواست کی گئی پاکستان نے ان دونوں معاملات کوخوش آمدید کہا۔ اپنا دورہ امریکہ مکمل کرنے کے بعد وزیر اعظم عمران خاں ابھی پاکستان پہنچے ہی ہیں کہ افغان طالبان کی جانب سے پیغام آ گیا ہے کہ اگر امن کے لئے مذاکرات میں طالبان کو مدعو کیا جاتا ہے تو وہ خوشدلی سے آنے کو تیار ہیں۔ اس پر افغان طالبان کا مزید کہنا ہے کہ اگر پاکستان نے مذاکرات کی دعوت دی تو اُسے ضرور قبول کیا جائے گا اس دوران وہ وزیر اعظم پاکستان عمران خاں سے بھی ملیں گے۔ قطر کے دارا لحکومت دوحہ میں قائم افغان طالبان کے سیاسی دفتر کے ترجامن نے کہا ہے کہ وزیر اعظم پاکستان عمران خاں نے اپنے دورہ امریکہ میں کہا تھا کہ وہ طالبان سے ملیں گے اور اُنہیں کہیں گے کہ وہ افغان حکومت سے مذاکرات کریں تو اگر ہمیں پاکستان کی جانب سے رسمی دعوت ملتی ہے تو ہم جائیں گے۔

Facebook Comments