بڑی بریکنگ نیوز: رانا ثناء اللہ نے منشیات کے کاروبار کا اعتراف کر لیا

158

اسلام آباد (نیوز ڈیسک آن لائن) چند یوم قبل مسلم لیگ ن کے صوبائی صدر اور سابق صوبائی وزیر قانون پنجاب رانا ثناء اللہ سے اینٹی نارکو ٹکس فورس نے موٹروے پر 15 کلو ہیئروئن پکڑنے جانے کا دعوی کیا تھا جس پر اُن کے خلاف مقدمہ بھی درج کیا گیا تھا اور اب چالان بھی عدالت میں جمع کروایا جا چکا ہے۔

جج مسعود ارشد نے ملزم رانا ثناء اللہ کو 29 دسمبر کو طلب کر کرلیا چالان میں کہا گیا ہے کہ ملزم رانا ثناء اللہ نے بتلایا کہ وہ سیاست میں حصہ لیتا ہے اور سیاسی اخراجات کو پورا کرنے کے لئے رقم کی ضرورت ہوتی ہے جس کی وجہ سے وہ منشیات اسمگلنگ کے دھندے سے جُڑا ہوا ہے اور وہ فیصل آباد سے افغانیوں سے ہیروئن خرید کر اسمگل کرتا ہے۔ چالان میں رانا ثناء اللہ کو قصور وار قرار دیا گیا ہے اب اس کیس کا باقاعدہ ٹرائل بھی شروع ہو چکا ہے جبکہ قانونی ماہرین کے مطابق اس کیس میں رانا ثناء اللہ کی جلد ضمانت ہونا مشکل ہے جبکہ وفاقی ویر مملکت برائے داخلہ شہریار خاں آفریدی نے کہا ہے کہ قانون سب کے لئے ایک جیسا ہے اے این ایف پندرہ روز سے رانا ثناء اللہ کو ابزرو کر رہی تھی اس کیس کے تمام ثبوت اے این ایف کے پاس موجود ہیں جو ٹرائل کے موقع پر پیش کئے جائیں گے جبکہ رانا ثناء اللہ کی اہلیہ کا موقف ہے کہ رانا ثناء اللہ کو سیاسی انتقام کا نشانہ بنانے کے لئے اُن پر منشیات اسمگلنگ کا جھوٹا مقدمہ درج کروایا گیا ہے اور اب رانا ثناء اللہ کا ہم شکل ڈھونڈ کر رانا ثناء اللہ کی گاڑی موٹروے پر لے جا کر اُس سے برآمدگی کی جائے گی۔

Facebook Comments